✿⊱╮Apni Apni Passand ✿⊱╮

Discussion in 'Urdu Adab & Shayeri' started by Areej, May 1, 2013.

  1. hashmie

    hashmie New Member

     
  2. hashmie

    hashmie New Member

    عمدہ
     
  3. Asif AkaSh Marwat

    Asif AkaSh Marwat New Member

    دوزخ مجھے قبول ہے ہمراہِ یار کےــــ!
    جنت میں جاکے ہجر کے صدمے اٹھاۓ کون....! :)
     
    shakeel orakzai and Zeeshanef like this.
  4. Sabnam Khan

    Sabnam Khan New Member

    आशियाँ जल गया गुल्सिताँ लुट गया हम क़फ़स से निकल कर किधर जाएँगे
    इतने मानूस सय्याद से हो गए अब रिहाई मिलेगी तो मर जाएँगे
    aashiyaa.n jal gayaa gulsitaa.n luT gayaa ham qafas se nikal kar kidhar jaa.e.nge
    itne maanuus sayyaad se ho ga.e ab rihaa.ii milegii to mar jaa.e.nge
    آشیاں جل گیا گلستاں لٹ گیا ہم قفس سے نکل کر کدھر جائیں_گے
    اتنے مانوس صیاد سے ہو گئے اب رہائی ملے_گی تو مر جائیں_گے
     
    shakeel orakzai and Zeeshanef like this.
  5. shakeel orakzai

    shakeel orakzai Super Moderator

    شور دِن کو نہیں سونے دیتا
    شب کو سنّاٹا جگا دیتا ہے
    سیف الدین سیؔف​
     
    Zeeshanef likes this.
  6. Sabnam Khan

    Sabnam Khan New Member

    दिल गवारा नहीं करता है शिकस्त-ए-उम्मीद
    हर तग़ाफ़ुल पे नवाज़िश का गुमाँ होता है
    dil gavaaraa nahii.n kartaa hai shikast-e-ummiid
    har taGaaful pe navaazish kaa gumaa.n hotaa hai
    دل گوارا نہیں کرتا ہے شکست_امید
    ہر تغافل پہ نوازش کا گماں ہوتا ہے
     
  7. Mishalkhan886

    Mishalkhan886 New Member

  8. Sabnam Khan

    Sabnam Khan New Member

  9. Areej

    Areej Active Member

    ہاں مرے جُرم کی کچھ اور بھی تشہیر کرو
    کیا خبر، جشن مری موت کا تہوار بنے
     
    Zeeshanef likes this.
  10. Areej

    Areej Active Member

    یہ دل کا ٹپکنا، کہ ٹھہرتا ہی نہیں ہے
    یارو! کوئی نشتر، کوئی مرہم، کہ چلا میں
     
    Zeeshanef likes this.
  11. Sabnam Khan

    Sabnam Khan New Member

  12. Zeeshanef

    Zeeshanef Well-Known Member

    ستاروں سے آگے جہاں اَور بھی ہیں
    ابھی عشق کے امتحاں اَور بھی ہیں

    تہی زندگی سے نہیں یہ فضائیں
    یہاں سیکڑوں کارواں اَور بھی ہیں

    اِسی روز و شب میں الجھ کر نہ رہ جا
    کہ تیرے زمان و مکاں اَور بھی ہیں

    تو شاہیں ہے، پرواز ہے کام تیرا
    ترے سامنے آسماں اَور بھی ہیں

    علامہ محمد اقبال (9 نومبر 1877ء تا 21 اپریل 1938ء)
     
  13. shakeel orakzai

    shakeel orakzai Super Moderator

    اترا نہیں ہے دل سے وہ کوشش کے باوجود ۔ ۔ ۔ ۔ ۔!!!!
    ایک شخص میری ذات پر بھاری ہے اس قدر
     
    Areej likes this.
  14. Sabnam Khan

    Sabnam Khan New Member

    तेरी रूह में सन्नाटा है और मिरी आवाज़ में चुप
    तू अपने अंदाज़ में चुप है मैं अपने अंदाज़ में चुप
    terii ruuh me.n sannaaTaa hai aur mirii aavaaz me.n chup
    tuu apne andaaz me.n chup hai mai.n apne andaaz me.n chup
    تیری روح میں سناٹا ہے اور مری آواز میں چپ
    تو اپنے انداز میں چپ ہے میں اپنے انداز میں چپ
    Reference: rekhta.org
     
    Last edited: Nov 16, 2016
    Areej likes this.
  15. Areej

    Areej Active Member

    بولے کوئی ہنس کر تو چھڑک دیتے ہیں جاں بھی
    لیکن کوئی روٹھے تو منایا نہیں جاتا
    _______
     
  16. Sabnam Khan

    Sabnam Khan New Member

    is tarah bhii chalaa hai kabhii kaarobaar-e-shauq
    ruuThe ko.ii to us ko manaa lenaa chaahiye
    इस तरह भी चला है कभी कारोबार-ए-शौक़
    रूठे कोई तो उस को मना लेना चाहिए
    اس طرح بھی چلا ہے کبھی کاروبار شوق
    روٹھے کوئی تو اس کو منا لینا چاہیئے
    Reference: rekhta.org
     
  17. Zeeshanef

    Zeeshanef Well-Known Member

    کبھی کہا نہ کسی سے ترے فسانے کو
    نہ جانے کیسے خبر ہو گئ زمانے کو

    دعا بہار کی مانگی تو اتنے پھول کھلے
    کہیں جگہ نہ رہی میرے آشیانے کو

    مری لحد پہ پتنگوں کا خون ہوتا ھے
    حضور شمع نہ لایا کریں جلانے کو

    سنا ہے غیر کی محفل میں تم نہ جاؤ گے
    کہو تو آج سجا لوں غریب خانے کو

    دبا کے قبر میں سب چل دئیے دعا نہ سلام
    ذرا سی دیر میں کیا ہو گیا زمانے کو

    اب آگے اس میں تمہارا بھی نام آئے گا
    جو حکم ہو تو یہیں چھوڑ دوں فسانے کو

    قمر ذرا بھی نہیں تم کو خوف رسوائی
    چلے ہو چاندنی شب میں انہیں بلانے کو

    قمر جلالوی
     
    Last edited: Nov 28, 2016
    Areej likes this.
  18. Sabnam Khan

    Sabnam Khan New Member

    خفا ہونا ذرا سی بات پر تلوار ہو جانا


    مگر پھر خودبخود وہ آپ کا گل نار ہو جانا

    کسی دن میری رسوائی کا یہ کارن نہ بن جائے


    تمہارا شہر سے جانا مرا بیمار ہو جانا

    وہ اپنا جسم سارا سونپ دینا میری آنکھوں کو


    مری پڑھنے کی کوشش آپ کا اخبار ہو جانا

    کبھی جب آندھیاں چلتی ہیں ہم کو یاد آتا ہے


    ہوا کا تیز چلنا آپ کا دیوار ہو جانا

    بہت دشوار ہے میرے لیے اس کا تصور بھی


    بہت آسان ہے اس کے لیے دشوار ہو جانا

    خفا ہوتے ہی اس کی اجنبیت جاگ اٹھتی ہے


    جو خوش ہونا تو پھر میرے گلے کا ہار ہو جانا

    کسی کی یاد آتی ہے تو یہ بھی یاد آتا ہے


    کہیں چلنے کی ضد کرنا مرا تیار ہو جانا

    کہانی کا یہ حصہ آج تک اک خواب لگتا ہے


    ترا سر پر بٹھا لینا مرا دستار ہو جانا

    محبت اک نہ اک دن یہ ہنر تم کو سکھا دے گی


    بغاوت پر اترنا اور خود مختار ہو جانا

    نظر نیچی کئے اس کا گزرنا پاس سے میرے


    ذرا سی دیر رکنا پھر صبا رفتار ہو جانا

    کہیں ایسا نہ ہو وہ کم سخن بد نام ہو جائے


    سنو اب آنسوؤ تم بھی ذرا ہشیار ہو جانا
    Reference: rekhta.org
     
    Zeeshanef likes this.
  19. Zeeshanef

    Zeeshanef Well-Known Member

    wah wah bohat khoob...
     
  20. Areej

    Areej Active Member


    جُھوٹے وعدوں کی لذتیں مت پوچھ
    آنکھ در سے لگی ہی رہتی ہے

     
    Zeeshanef likes this.

Share This Page